انڈیا میں عورتوں کو ننگا کیا جارہاہے

ظلم و بر بریت کی افسوسناک کہانی ۔۔ انڈین معاشرہ اپنی انتہائی نچلی سطح پر پہچ چکا ہے ۔ پہلے اس ویڈیو کو دیکھیں ۔ پھر ہم اس کی مزید کہانی آپ کو بتاتے ہیں ۔

یہ ایک مسیحی خاتون ہے ۔ جسے سڑکوں پر ننگا کر کے گھمایا جارہا ہے ۔ نا صرف اسے ننگا کر کے سڑکوں پر گھمایا گیا بلکہ اسے پورے راستے مارتے رہے ۔ اور نعرے لگاتے رہے ۔ یہ تمام لوگ انتہا پسند ہندو ہیں ۔ سڑک پر لوگ تماشہ دیکھتے رہے ۔ پہلے اس عورت کے گھر میں گھسے ۔ اسے وہاں مارا ۔ پھر اس عورت کا گھر جلا دیا گیا۔ جب ان ظالموں کا دل نہیں بھرا تو انھوں نے ایک اور بڑا ظلم کیا ۔ اس کے کپڑے اتار کر اسے ننگا کر دیا ۔ اس کو ننگا کر کے اس کی ویڈیو بنائی گئی ۔

جب اس سے بھی دل نہیں بھرا تو اسے انڈیا کی سڑکوں پر ننگا گھمایا گیا ۔۔ سب دکان داروں اور گھر والوں کو منع کر دیا گیا کہ کوئی بھی اس عورت کو کپڑے نہ دے۔ جب اس سے بھی انھیں سکون نہیں ملا تو انھوں نے اس عورت کو سڑکوں پر مارنا بھی شروع کر دیا ۔ پولیس تماشہ دیکھتی رہی ۔ یہ سب ہندو انتہا پسند جماعت کے رہنما ہیں ۔ ان کے کارکن ہیں۔

دنیا کب تک یہ سب دیکھیں گی ۔ انڈیا میں مسلمان ،مسیحی عورتوں کے ساتھ یہ سب کچھ ہو رہا ہے ۔ اور سب تماشہ دیکھ رہے ہیں ۔ یہ واقعہ انڈیا کی ریاست بہار میں پیش آیا ہے ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ یہ سب ایک شخص کے قتل کے بعد ہوا ہے ۔ پولیس کا مزید کہنا ہے انھوں نے اس عورت پر ہونے والے ظلم پر ایف آئی آر درج کر لی ہے۔ لیکن تاریخ یہ بتاتی ہے کہ انڈیا میں اس طرح کے ہندو انتہا پسندوں کے خلاف کبھی کوئی کارروائی نہیں ہوئی ہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us