1 لاکھ کا جوتا کس نے چرایا!

1000 یا 2000 کے نہیں بلکہ اس دفعہ لگ گئے ہاتھ 100000 روپے کی جوتے! جی ہاں چوروں نے جانے میں کیا یا انجانے میں لیکن اس بار صحیح طرح لوٹ لیا۔

لاہور کے رہائشی شیراز بشیر نامی نوجوان گنگارام اسپتال سےمیسن روڈ مسجد نمازپڑھنے گیا تھا اور ادائیگی نماز کے بعد جوتوں سے محروم ہونا پڑ گیا۔ مطلب یہ کہ نماز کے لیئے انسان اول تو اچھا جوتا پہن کر نہ آئے اور اگر آگیا ہے تو اس کی حفاظت یقینی بنائے ۔

ایل آر نیوز کے نمائندے کے مطابق واقعہ تھانہ سول لائن کی حدود میں قائم مسجد میں پیش آیا جہاں چور بقول شہری ایک لاکھ روپے مالیت کے جوتے چوری کرکے فرار ہوگیا۔

متاثرہ شہری نے تھانہ سول لائن میں شکایت درج کرواتے ہوئے بتایا کہ وہ نماز پڑھ کر باہر نکلا تو مسجد سے اس کے جوتے چوری ہوچکے تھے جس پر اسے شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔

پولیس کے مطابق شہری شیرازبشیرڈیفنس کا رہائشی ہے اور گنگارام اسپتال آیا تھا، شہری کی درخواست پر مقدمہ درج کرکے واقعے کی تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔

شہری نے مطالبہ کیا ہے کہ سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سےچورکو تلاش کیا جا سکتا ہے، اور پولیس اس میں اس کا تعاون کرے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us