شاہراہ فیصل پر ٹریفک جام کب تک رہے گا؟

مسافر ائیر پورٹ اور کینٹ اسٹیشن نہ پہنچ سکے اور نہ ہی مریض اسپتال۔ اسکول جانے والے بچوں کے والدین کالز کر کر کے ہلکان ہوتے رہے مگر کچھ نہ ہوا۔

واٹر بورڈ کی ناقص کارکردگی کے باعث کلب روڈ کی مین سیوریج لائن کی مرمت میں تاخیر سے شہر میں بد ترین ٹریفک جام ہوگیا۔ گٹر ابلنے سے بازاروں میں سیوریج کا پانی جمع ہونے سے کاروبار بری طرح متاثر ہورہا ہے۔

ذرائع کے مطابقگزشتہ روز سے جاری رہنے والا کام تا حال مکمل نہ ہوسکا۔ تاہم حکام کا کہنا ہے کہ مزید 2 روز اور لگ سکتے ہیں۔ لائن دھنسنے کی وجہ سے صدر ، لکی استار ، ایٹریم مال ، میٹروپول اور کلفٹن سمیت مختلف شاہراہوں پر گٹر ابل پڑے ہیں۔ گند پانی سڑکوں پر آنے سے شہر میں ٹریفک کا نظام درہم برہم ہوگیا ہے۔ جبکہ صدر اور گردونواح میں سیوریج کا پانی کھڑا رہنے سے کاروبار شدید متاثر ہورہا ہے۔ اسکے ساتھ ہی پی آئی ڈی سی چوک سے میٹرول پول جانے والی سڑک کو ٹریفک کے لیے بند کردیا گیا۔ متبادل راستہ نہ دینے کے باعث شہر میں شدید ٹریفک جام ہوگیا ہے۔ کالا پل ، کورنگی ، قیوم آباد ،کورنگی صنعتی ایریا، طارق روڈ ، جام صادق روڈ، نرسری ، جیکب  لائن ، صدر ، لائٹ ، ہاؤس ، پریڈی اسٹریٹ ، نیو ایم اے جناح روڈ ، ماڑی پور سمیت شہر کی اہم شاہراہوں پر بدترین ٹریفک جام ہے۔ ایمبولینسز ٹریفک جام میں پھنس گئی ہیں۔ اور کینٹ اسٹیشن پر جانے والے مسافر سامان سمیت پیدل کینٹ اسٹیشن جانے ہپر مجبور ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق مذکورہ لائن ڈالنے کے لیے 25 فٹ گہری کھدائی کی گئی ہے۔ تاجر اور دیگر آفسز اور اسکول جانے والے طلبہ و طالبات انکے والدین سمیت شہریوں کا کہنا ہے کہ یہ انتظامیہ کی کارکردگی پربہت بڑا سوالیہ نشان ہے۔

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us