اساتذاہ بھی طالب علموں کو لوٹنے لگے، پیسہ دو اور پاس ہوجاؤ

سندھ کے گورنمنٹ کالجز میں استاد طالبِ علموں کو لوٹنے لگ گئے۔ سرکاری اسکولوں اور کالجز کے اساتذہ پورا سال تو کالجز میں باتیں کرنے کے لئے آتے ہیں اور آخر میں طالبِ علموں کو پاس کرنے کے پیسے لیتے ہیں۔

ان کو تعلیم دینے سے کوئی مطلب نہیں اور تعلیم جیسے معزز پیشے کو اپنی کرپشن سے گندہ کر دیتے ہیں۔ طالبِ علموں سے پیسے لے کر وہ ان کو کیا سکھا رہے ہیں کہ حرام کیسے کھاتے ہیں۔ ایسے اساتذہ ہونگے تو اس ملک کے بچے کیا ترقی کریں گے کیا آگے بڑھیں گے؟

 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us