چرسیوں کے شہر کراچی نے نیویارک کو ہرا دیا

Man smoking cigarette

کراچی دنیا میں چرس پینے میں دنیا میں دوسرے نمبر پر آگیا۔ کراچی اور کسی چیز میں تو نیویارک کو پیچھے چھوڑ نہ سکا مگر چرس میں بازی مار گیا۔ جرمن کمپنی اے بی سی ڈی کی تحقیق کے مطابق کراچی میں 42 ٹن چرس پھونکی جاتی ہے جس کے باعث وہ دنیا کا دوسرا چرس پینے والا ملک بن چکا ہے۔ نیو یارک میں تقریباً 77 ٹن چرس پھونکی جاتی ہے جو کہ دنیا میں سب سے زیادہ چرس پینے والا شہر ہے۔

پاکستان میں چرس پینا ایک غیر قانونی عمل ہے۔ رپورٹ کے مطابق اگر پاکستان صرف اپنے مقبول برانڈز کے سگریٹ پر نافذ ٹیکس کی شرح سے چرس پر بھی ٹیکس نافذ کر دے تو اس کو سالانہ ساڑھے 13 کروڑ ڈالرز سے زائد آمدن ہو سکتی ہے۔ اگر یہ ٹیکس امریکہ میں چرس پر نافذ ٹیکس کے تناسب سے لگایا جائے تو پاکستان تقریباً چار کروڑ 10 لاکھ ڈالر کی آمدن حاصل کر سکتا ہے۔آمدنی تو ہو سکتی ہے مگر چرس سے ہونے والے نقصانات کا کیا؟

رپورٹ میں دنیا کے  10 مملک کا ذکر کیا گیا ہے۔ کراچی، قائرہ اور لندن وہ شہر ہیں جن میں چرس مکمل طور پر غیر قانونی ہے۔ جب کہ نیویارک، نئی دہلی، ممبئی، شکاگو، ماسکو اور کینیڈا کے شہر ٹورنٹو میں اس کے استعمال کی جزوی طور اجازت ہے۔ اس فہرست میں صرف ایک شہر لاس اینجلس ایسا ہے جہاں چرس کا استعمال مکمل طور پر قانونی حیثیت رکھتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us