وین ڈرائیور کی بچی سے زیادتی، ویڈیو وائرل کرنے کی دھمکیاں

خیبر پختونخواہ کے ڈسٹرکٹ مانسیرہ میں ایک اسکول وین ڈرائیور نے نوی جمائت کی طالب علم کو زیادتی کا نشانہ بنایا۔ بچی کو وہ جنگلات میں لے کر گیا اور بندوق کی نوک پر اس کے ساتھ زیادتی کی اور اس کی ویڈیو بنائی۔ ڈرائیور نے بچی کو ڈرایا دھماکا، اگر اس نے اس واقعے کے بارے میں کسی کو بتایا تو وہ اس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کردیں گے۔ پولیس نے مطابق لڑکی ایک ہفتے تک اپنے ساتھ ہونے والے افسوسناک واقع کو ڈر اور خؤف کے سبب چھپاتی رہی۔ اسے یہ ڈر تھا کہ وہ آدمی اس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کر دے گا اور اس کو بدنام کرے گا۔

لڑکی کی میڈیکل رپورٹ کے بعد اس بات کی تصدیق ہو گئی کہ اس کے ساتھ زیادتی ہوئی ہے۔ پولیس نے ملزم ڈرائیور محمد تنویر کے گھر پر چھاپہ مار کر اس کو گرفتار کر لیا، اور اس کو تھانے منتقل کر دیا گیا۔ پولیس نے والدین کو انصاف کے لئے یقین دہانی کروائی اور واقعے کی تحقیقات شروع کردی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us