ریحام خان کا دھرنے والوں کے لیے ناشتہ!

کیا وہ شاہی دعوتیں، وہ رونقیں، اور بڑے بڑے میلے۔۔۔!

وہ جو خواب دیکھائے تھے مولانا نے، دھرنے والوں کو دارالحکومت لا کر رسوا کروا دیا۔

اتنی سخت سردی اور ایسے موسم میں، مدرسوں میں بند مولویوں نے اگر جھولوں اور کرکٹ کے مزے ہی لینے ہوتے، تو شاید وہیں سے ہی لے لیتے جہاں سے آئے ہیں۔۔۔ لیکن شاید ان کے نصیب میں گرم روٹی اور چھت بھی نہیں تھی۔ اسی لیے ہی کیا پتا، دھرنے کے شرکاؑ کو روٹی یا گرم کمبل دے کر لوگ اس "سیاسی جہاد” میں اپنا کردار ادا کر رہے ہیں۔

آج ہی ریحام خان نے ایک ٹویٹ کی، جس میں بڑے ہی فخریہ انداز میں انہوں نے اپنی ٹیم کی کاوشوں کو سراہا، جس میں انہوں نے دھرنے کے کچھ شرکاؑ کو ناشتہ کرایا تھا۔

ریحام خان کی عمران خان اور ان کی حکومت پر تنقید اورر طنز اپنی جگہ، لیکن اس ٹویٹ، اور پھر ایسے کاموں کی وجہ کچھ سمجھ نہیں آئی۔ کیا یہ کوئی سبیل فی اللہ کا معاملہ ہے یا پھر سبیل فی مولانا؟

واضع رہے، کہ ریحام خان ایک سابق معروف بی بی سی کی صحافی ہونے کے ساتھ ساتھ، عمران خان کی سابق اہلیہ بھی رہ چکی ہیں۔ اُن کی عمران خان سے شادی تو صرف محض ۱۱ مہینے ہی رہ سکی تھی، لیکن تب سے لے کر اب کر، وہ حکومتی اور عوامی سطع پر عمران خان کی سب سے بڑی مخالف نظر آتی ہیں۔

بعض جگہ پر یہ بھی کہنا ہے کے ریحام خان کے مسلم لیگ ن کے ساتھ تعلقات اب قریب تر ہوتے جا رہے ہیں، جس کے یہ اثرات ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us