پی ٹی آئی کی ساکھ کو نقصان، عمران خان سے یا حامد خان سے!

تحریک انصاف کے اندر ہی انکے مخالف آوازیں اٹھنا شروع ہوگئیں۔ پی ٹی آئی نے الیکشن میں جیتنے کے بعد سے مسلسل یوٹرن لیے اور اپنے  تمام وعدوں کے مخالف اقدامات کیے۔ جس سے ان کی ساکھ کو بہت نقصان پہنچامگر انکا موقف یہ ہے کہ ان کی ساکھ کو نقصان پہنچانے کے ذمہ دار حام خان ہیں۔

تحریک انصاف کے بانی اور سینیئر رہنما حامد خان ایڈووکیٹ کو میڈیا پر حکومتی اقدامات پر تنقید اور پارٹی پالیسی کے خلاف بیانات جاری کرنا مہنگا پڑگیا۔

تفصیلات کے مطابق حامد خان کے بیانات پر وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر تحریک انصاف کے سیکریٹری جنرل عامر کیانی نے ایکشن لیتے ہوئے حامد خان کی پارٹی رکنیت معطل کرتے ہوئے انہیں شوکاز نوٹس جاری کردیا ہے۔

پی ٹی آئی کے سیکریٹری جنرل عامر کیانی نے حامد خان کو شوکاز نوٹس میں کہا ہے کہ آپ کے بیانات سے پارٹی ساکھ کو نقصان پہنچا۔ آپ نے میڈیا میں بیانات کے ذریعے پارٹی پر غلط  الزام لگائے ہیں۔

دوسری جانب اطلاعات کے مطابق حامد خان نے اپنی رکنیت معطلی کے فیصلے کو تسلیم کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ میں تحریک انصاف کا بانی ہوں اور میں نے ہی پارٹی کا آئین بنایا جس طرح کوئی بھی عمران خان کی پارٹی رکنیت معطل نہیں کرسکتا اسی طرح میری بھی رکنیت معطل نہیں ہوسکتی۔ انہوں نے کہا کہ جب تک عمران خان کی جانب سے ان کو احکامات نہیں ملیں گے وہ یہ فیصلہ تسلیم نہیں کریں گے۔  

واضح رہے کہ چند روز قبل حامد خان نے ایک ٹی وی انٹرویو میں کہا کہ پاکستان تحریک انصاف تبدیلی کی جماعت تھی مگر اب صرف اسٹیبلشمنٹ کی جماعت بن گئی ہے۔ تحریک انصاف میں لوگ بھیجے گئے اور ان لوگوں کے بھیجے جانے سے پی ٹی آئی کا بہت نقصان ہوا۔ تحریک انصاف پر مفاد پرستوں نے قبضہ کرلیا ہے جبکہ حامد خان نے عمران خان کو بھی آڑے ہاتھوں لیا اور ان پر بھی سنگین الزامات لگائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us