غیر قانونی فارم ہاؤس،ہوٹل بچانے کے لیے سرگرمیاں تیز

ضلع ملیر میں بااثر افراد کا قبضہ اور غیر قانونی قائم کردہ فارم ہاؤسز، واٹر پارکس اور سرد خانے بچانے کی سر گرمیاں تیز کر دی گئیں۔

اینٹی کرپشن حکام کی طرف سے 49 غیر قانونی تعمیرات سیل کرنے کے احکامات کے باوجود ڈیڑھ ماہ سے اب تک کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ اس ملی بھگت میں شامل افسران 30 سالہ لیز کو 99 سالہ لیز کروانے کے مشورے دے رہے ہیں تاکہ اربوں روپے کی سرکاری زمین کو نجی کاروبار کے لیے استعمال کیا جائے۔

ضلع ملیر میں مختلف باثر افراد نے زرعی اور دیگر نوعیت کے مقاصد کے لیے 23 برس کی اراضی لیز پر لی۔ سرکاری زمین گزشتہ کئی برس سے غیر قانونی طور پر کمرشل مقاصد کے لیے استعمال کر رہے ہیں، جس میں محکمہ ریونیو کے افسران کی ملی بھگت شامل ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us