آن پیک اورآف پیک ٹیرف کے بل، صارفین پریشان

کے الیکٹرک نے صارفین کے لیے آف پیک اور آن پیک ٹیرف کے بل متعارف کرائے جس کے بعد سے صارفین پریشان ہیں۔

جون کے مہینے سے لاگو ہونے والے آف پیک اور آن پیک ٹیرف میں تھری فیز میٹر رکھنے والے ایسے صارفین جن کا منظورہ شدہ لوڈ 5 کلوواٹ یا اس سے زائد ہے۔ ان کا پرانا سلیب سسٹم ختم کر کے صرف دو سلیب گرمیوں میں شام (30: 06) بجے سے رات ( 30: 10 ) بجے تک آن پیک جس کے نرخ فی یونٹ بیس روپے ستر پیسے ہوں گے جبکہ بقیہ بیس گھنٹوں کو آف پیک قرار دیتے ہوئے فی یونٹ چودہ روپے اڑتیس پیسے چارج کیے جائیں گے۔ کمرشل میٹر رکھنے والے صارفین پر بھی آن پیک اور آف پیک فارمولا لاگو ہو گا۔

الیکٹریسٹی ڈیوٹی، جنرل سیلز ٹیکس، ٹی وی لائسنس فیس جوکہ صارفین پہلے ہی ادا کرتے رہے ہیں بجلی کے بلوں میں شامل رہیں گے۔

 صارفین کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت اور نیپرا کو پرانا فارمولا بحال کرنا چاہیئے۔ نیا فارمولا صرف شہریوں سے زیادہ بل وصول کرنے کا ایک نیا ہتھکنڈہ ہے۔ جبکہ کے الیکٹرک ترجمان نے کہا کہ کے الیکٹرک نے خود نہیں نیپرا نے اسے نافذ کیا ہے۔ صارفین اگر پیک آور میں کم بجلی استعمال کریں گے۔ ان کا بل مجموعی طور پر کم آئے گااور جن صارفین کے ہاں ڈیجیٹل میٹر نصب ہیں وہ آن پیک اور آف پیک میں استعمال ہونے والے یونٹ خود دیکھ سکتے ہیں۔ پھر بھی اگر کوئی مشکل ہو تو کے الیکٹرک کے قریبی آئی بی سی جاکر معلومات لی جاسکتیں ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us