جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی نے طلبہ کے لاکھوں روپے ہضم کرلیے

جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی کی ایک اور نااہلی سامنے آگئی،الحاق شدہ 9 میڈیکل کالجز کے فائنل امتحان پاس کرنے والے سینکڑوں طلبہ کو رُلا دیا۔امتحانات کا نتیجہ آئے ہوئے دو ماہ سے زائد کا عرصہ گزر گیا لیکن یونیورسٹی انتظامیہ نے کسی بھی طالب علم کو مکمل مارکس شیٹ اور سرٹیفکیٹ جاری نہیں کیا طلبہ سے ارجنٹ فیس کی مد میں لاکھوں روپے لیے گئے ہیں مارکس شیٹ اور سرٹیفکیٹ نہ ملنے کی وجہ سے طلبہ کو شدید مشکلات درپیش ہیں۔اس کے علاوہ مارکس شیٹ کی بغیر سرکاری اور نجی اسپتالوں میں ہاؤس جاب نہیں مل رہی۔ان کا قیمتی وقت ضائع ہورہا ہے۔ملک کے بیشتر جامعات کورس مکمل ہونے پر طلبہ کو پہلی مارکس شیٹ بلا معاوضہ جاری کرتی ہے لیکن جناح میڈیکل یونیورسٹی نے اس کے لیے بھاری فیس مقرر کر رکھی ہے کمبائن مارکس شیٹ ارجنٹ ڈھائی ہزار روپے فیس لی جا رہی ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us