لیاری کا حاجی لے گیا بازی

حج کرنے کے بعد حاجی کہلوانے کے شوقین حضرات حج سے واپسی پر فلائٹ سے اترتے ہی اس در کے کرشمات بیان کرنا شروع ہوتے ہیں اور رکنے کا نام نہیں لیتے۔ لوگ پھولوں کے ہار لیے ان کے استقبال میں ایسے کھڑے ہوتے ہیں جیسے کسی ملک کے وزیراعظم یا صدر کے استقبال کے لیے کھڑے ہوں۔ یہ تو وہ لوگ ہیں جو حج پر جاتے ہیں اور پھر مکمل مذہبی رنگ میں رنگیں یا نہ رنگیں مگر باتیں ایسی کرتے نظر آتے ہیں کہ ہر بات کو سن کر ایمان تازہ ہوتا ہوا محسوس ہوتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:زنا کے الزام میں عورت بِک گئی

بے نظیر بھٹو شہید یونیورسٹی کے ڈیپارٹمنٹ آف بزنس میں ملازمت کرنے والے کاشف شاہ کا نام حج قرعہ اندازی میں نکلا۔ کاشف نےحج پر جانے کے لیے ادارے سے چھٹیاں منظور کرائیں۔ ساتھ ہی پونے 3 لاکھ کی رقم بھی وصول کی۔ جس کے بعد وہ سب کو الوداع کہہ کر حج پر چلاگیا۔ مگر اطلاعات کے مطابق وہ صرف یونیورسٹی کو دکھانے کے لیے کیا گیا۔ تمام حاجیوں کی روانگی کے ساتھ ہی اس نے اسکول کی چھٹیاں منظور کرائیں۔ حاجیوں کے واپسی کے وقت ہی اسکول میں جوائننگ دی۔ حاجیوں کی طرح اپنا سر بھی منڈوایا۔ جوائننگ کے ساتھ ہی کاشف شاہ نے اپنے ساتھیوں ، اساتذہ اور ایڈمن افسران میں آبِ زم زم اور کھجوریں بھی تقسیم کیں۔ کئی دنوں تک حاجی کی حیثیت سے مبارکبادیں بھی وصول کرتا رہا۔ جب انتظامیہ کی جانب سے سفری دستاویزات مانگی گئیں تو کئی بار ٹالتا رہا۔ جس کے بعد انتظامیہ نے اسکے شناختی کارڈ کے ذریعے اسکی تفصیلات نکلوائیں تو معلوم ہوا کہ وہ تو حج پر گیا ہی نہیں۔

ذرائع کے مطابق کاشف حج کی رقم ہڑپنے کے چکر میں تھا۔ حقیقت سامنے آنے پر  انتظامیہ کی جانب سے حج کے نام پر دی جانے والی رقم کی واپسی کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ اور ایک ماہ کی مہلت دی گئی ہے۔ اگر کاشف نے حج کے پیسے نہیں لوٹائے تو اس کے خلاف محکمہ جاتی کارروائی کا بھی عندیہ دیا گیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us