ٹماٹر 17 روپے کلو، پر کدھر؟

ٹماٹر اب بکے گا کس کی مرضی سے یہ بحث ابھی جاری ہے، حکومت کے ٹماٹر کے نرخ جو کہ سبزی منڈی کہ بھی ہیں اپنی جگہ لیکن سبزی فروشوں کے ٹماٹر کے ریٹ اپنی جگہ۔ سبزی مافیہ من مرضی کی قیمتوں پر سبزی فروخت کر رہے ہیں اور عوام خریدنے پر مجبور ہیں کیونکہ عوام کی سننے والا کوئی نہیں اور حکومتی نرخوں پر عمل درآمد کرانے کے لیئے خود حکومتی املاک اور پولیس اہلکار بھی ناکام ہیں۔

سبزی مافہیہ کی دلیری کہیں یا ایکا، علاقوں کے حساب سے الگ الگ سبزیوں کا الگ الگ ریٹ قائم جیسے متوسط طبقوں کی آبادی والی علاقوں میں ٹماٹڑ تقریبا ۳۰۰ روپے کے آس پاس جبکہ پوش علاقوں میں ۴۰۰ روپے تک فروخت کیا جا رہا ہے۔ اگر ٹماٹر کے نرخ سبزی منڈی کے حساب سے دیکھے جائیں تو اول کوالٹی کا ٹماٹر ۲۵۰ روپے اور دوئم کوالٹی کا ٹماٹر ۱۸۰ روپے پر فروخت کیا جا رہا ہے، بات کی جائے پیاز کی تو وہ ۸۰ سے ۱۰۰ روپے فی کلو، آلو ۵۰ روپے، کھیرا ۷۰ سے ۸۰ روپے فروخت ہو رہا ہے۔

سبزی مالکان نے یہ پورا ایک منظم مافیہ بنا لیا ہے اور ان کی اپنی بات میں اتنی پختگی ہے کی یہ کچھ سننے کو تیار نہیں۔ ایسے مواقعوں پر خاص طور پر حکومتی کارکردگی پر سوالیہ نشان اٹھتا ہے کہ کیا یہ ان کی نا کامی ہے یا عدم دلچسپی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us