فضائی کمپنیاں مسافروں سے اضافی رقم بٹورنے لگیں

سرما تعطیلات دوران فضائی کمپنیوں کی جانب سے کرائے کی مد میں 3 ارب روپے کی اضافی وصولی کا انکشاف ہوا ہے۔غیر قانونی طور پر اضافی کرایہ  لیا جارہا ہے اور ریونیو مینجمنٹ سسٹم ڈالر کی بڑھتی ہوئی قدر اور بڑھتی ہوئی تیل کی قیمت کی آڑ میں وصول کیا جارہا ہے۔ڈومسٹیک کی طرح بین الاقوامی ٹکٹ بھی مہنگے کر دیے گئے ہیں۔پی آئی اے،سیرین،ایئر بلیو کراچی سے اسلام آباد سیکٹر کا یکطرفہ کرایہ 30ہزار روپے وصول کرنے لگے ہیں۔ڈومسٹک پرواز کے ایگزیکٹو اکانومی کلاس دبئی کے ٹکٹ سے کئی گنا مہنگے فروخت کیے جارہے ہیں طلب زیادہ ہونے کی وجہ سے کئی شہروں میں آپریشن ری شیڈول جبکہ بعض شہروں کے لیے بکنگ بند ہوگئی ہے 10 جنوری تک کرایوں میں کمی کا کوئی امکان نہیں کیونکہ سرما کی تعطیلات میں اضافہ بھی ہوسکتا ہے سول ایو ایشن اتھارٹی اور مسابقتی کمیشن پر آنکھیں بند رکھی ہیں جو کرایہ 12 ہزار سے 16 ہزار کا تھا وہ اب 28ہزار سے 35 ہزار تک جا پہنچا ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us