کراچی ڈینٹل کالج میں کروڑوں کی کرپشن

 

میئر کراچی کی نااہلی کی وجہ سے 1600 سے زائد طالب علموں کا مستقبل داؤ پر لگ گیا،دسمبر میں امتحانات ہے اور گزشتہ 4 ماہ سے تدریسی عمل متاثر ہے ملازمین نے تالے لگا کر مختلف ڈپارٹمنٹس کو بند کردیا ہے کراچی نارتھ ناظم آباد میں واقع کراچی میڈیکل اینڈ ڈینٹل کالج کی انتظامیہ اقرباء پروری اور فرائض کی عدم دلچسپی نے کالج کو مالی بحران میں مبتلا کر دیا ہے،ملازمین کو4 ماہ سے تنخواہیں نہیں دی گئی ہے۔ جس کی وجہ سے ایک ماہ سے یہ احتجاج جاری ہے۔ ہڑتال کی وجہ سے انتظامیہ نے ہاؤس آفیسرز کے انڑویو غیر معینہ مدت کے لیے منسوخ کر دیےہیں،مالازمین کا کہنا ہے کے ایم سی حکام اور کالج انتظامیہ اس وقت ذاتی مفاد کے لیے تنخواہیں نہ دے کر پریشان کر رہی ہے بلکہ ہزاروں طلبہ کے مستقبل سے بھی کھیل رہی ہے میئر کراچی فنڈز نہ ہونے کا رونا رو کر 3 سال سے شہریوں کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں گزشتہ 10 برس سے کالج کے اخراجات میں کروڑوں کی خرد برد کی گئی ہے کالج کی  انتظامیہ نے ویلفیئر کا فنڈ تک نہیں چھوڑا ہے،انتظامی بد عنوانی کی وجہ سے شہر کا بہترین کالج تباہ کر دیا گیا ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us