ٹڈی دل کا پنجاب میں حملہ، اگلا شکار بلوچستان

ٹڈی دل نے کھیتوں میں تباہی مچا دی۔ مگر حکومت کی جانب سے ابھی تک کوئی موثر اقدامات نہیں لئے گئے۔

ٹڈی دل بہاول پور سے لے کر ڈیرہ ڈویژن تک پھیل گیا، جس سے فصلوں کو شدید نقصان پہنچا ہے اور سیکڑوں ایکڑ فصلیں متاثر ہوئی ہیں۔ ٹڈی دل کو بگانے کے لئے کسانوں کو محکمہ زراعت کی جسنب دے یہ حکم دیا گیا ہے کہ ٹڈی دل کو وہ ڈھول‘ٹین اور پٹاخے بجا کر بھگا دیں۔

ذرائع کے مطابق بہاولپور ڈویژن سے شروع ہونے والا 3کلو میٹر چوڑا اور10کلو میٹر طویل ٹڈی دلوں کا لشکر فصلوں کو تباہ کرتاآگے بڑھتا جا رہا ہے دو روز سے ضلع ڈیرہ غازی خان میں داخل ہو چکا ہے لیکن ابھی تک نہ وفاقی حکومت کے کانوں پر کوئی جوں رینگی ہے نہ ہی پنجاب حکومت نے کوئی انسدادی اقدامات اٹھائے حالانکہ فضائی سپرے کے ذریعے اس آفت پر قابو پایا جا سکتا ہے‘ ان دھوکےباز نا اہل حکمرانوں کوچلو بھر پانی میں ڈوب مرجا نا چاہئے‘یہ صوبہ توکیا بنائیں گے جنوبی پنجاب کو ٹڈی دل کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا ہے ۔

چنی گوٹھ اور گردونواح میں ٹڈی دل کے حملہ ڈائریکٹر جنرل پنجاب ظفر یاب کے مطابق ٹڈی دل کا رخ بلوچستان کی طرف ہےیہاں نقصان کا اندیشہ نہیں‘معلوم ہوا ہے کہ ٹڈی دل نےچنی گوٹھ کے علاقوں حاصل لاڑ‘احمد نائچ‘ محمد نائچ، مہند سمیت دیگر علاقوں میں یلغار کر دی جس سے سیکڑوں ایکڑ پر کاشت کپاس‘ چاول‘ گنا اورچارےکی فصلیں تباہ ہو رہی ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us