مولانا کا پلان بی،پورا پاکستان بند !

مولانا نے دھرنا ختم کرنے کا اعلان کر دیا لیکن مکمل طور پر نہیں یعنی اب عمل ہو گا پلان بی پر جس کے مطابق اب ملک بھر کی شاہراہوں اور ہائی ویز بند ہونگی مولانا نے ابھی تک مکمل طور پر اپنی سیاسی گیم کے کارڈز شو نہیں کیے کیونکہ اس بار یہ دھرنا مختلف ہے

بنوں میں انڈس ہائی وے اور ہزارہ میں شاہراہ ریشم بند کی جائے گی۔

 مالاکنڈ ڈویژن میں چکدرہ، نوشہرہ میں حکیم آباد روڈ کو بند کیاجائےگا، مرکزی شاہراہوں کو جے یو آئی ف کے پلان بی کے تحت بند کیا جائے گا۔

جمیعت علماء اسلام (ف) نے ہزارہ ڈویژن میں اہم شاہراہوں اور شاہراہ قراقرم کی بندش کا بھی فیصلہ کیا ہے۔

ضلعی ترجمان جے یو آئی (ف) کا کہنا ہے کہ ضلع بٹگرام میں کس پل کے قریب شاہراہ قراقرم بندکی جائے گی،  اپر ہزارہ کے اضلاع  کیلئے چھترپلین سے شاہراہ قراقرم بند کی جائے گی۔

جے یو آئی (ف) کے بی پلان کے تحت بلوچستان میں چمن کوئٹہ شاہراہ پردھرنا دیا جائے گا۔ اس کے علاوہ آر سی ڈی شاہراہ خضدار کے مقام پر بند کی جائے گی۔

خیال رہے کہ جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے وزیراعظم عمران خان سے فوری مستعفی ہونے اور نئے انتخابات سمیت دیگر مطالبات کر رکھے ہیں تاہم حکومت اور اپوزیشن میں وزیراعظم کے استعفے اور نئے انتخابات کے معاملے پر ڈیڈ لاک برقرار ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us