محافظ ہی جان کے دُشمن نکلے

محافظ ہی جان کے دشمن نکلے تو پھر اعتبار کس پر کریں‌، کراچی میں پولیس والوں کی بھیانک حرکت سامنے آگئی، اطلاعات کے مطابق شہر قائد میں پولیس اہلکار شارٹ ٹرم کڈنیپنگ میں ملوث نکلے، شارع فیصل پولیس کے چار اہلکاروں کو حوالات میں بند کردیا گیا۔ذرائع کے مطابق شارٹ ٹرم کڈنیپنگ کا نشانہ بننے والے 5 نوجوانوں نے اعلیٰ افسران کو درخواست دی کہ ان کو وقار نامی پولیس اہلکار سمیت 4 اہلکاروں نے   اغوا کیا اور گلشن جمال میں واقع خالی پلاٹ پر لے گئے۔اہلکاروں نے متاثرہ نوجوانوں کی جیب سے 30 ہزار سے زائد کی رقم نکالی،وقار نامی شہری کا کہنا ہےکہ اسی دوران متاثرہ نوجوانوں کے دوست کا فون آیا تو پولیس اہلکاروں نے اس کو بھی بلالیا اور زبردستی اے ٹی ایم لے جاکر 37 ہزار روپے نکلوائے اور تمام افراد کو رہا کرتے ہوئے پولیس اہلکاروں نے دھمکی دی کہ کسی کو بتاؤ گے تو مقابلے میں مارے جاؤ گے۔اگر پولیس اہلکار یعنی محافظ ہی ایسا کریں گے تو کیا حال ہو گا اس معاشرے کا لیکن سوال یہ پیدا ہوتا ہے اداروں کے اعلی افسران اس وقت کیا کر رہے ہیں شہر کے حالات ٹھیک کرنے کے بجائے مزید بگاڑ رہے ہیں جس سے حالات مزید خراب ہو رہے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us