ظالم عاصمہ نے شوہر کی جان لے لی

کراچی میں پیش آیا ایک افسوس ناک واقعہ, جس کا نشانہ بنا شاہ زمان یہ پیرآباد کا رہائشی تھا،جیکب آباد اس کا آبائی گاؤں تھا،35سالہ شاہ زمان کو مبینہ طور پر اس کی  بیوی عاصمہ نے اپنے شوہرکو بجلی کے جھٹکے لگا کر موت کے گھاٹ اتار دیا۔ لاش شاہ زمان کے  خاندان کے لوگ پیرآباد پولیس اسٹیشن لے کر گئے۔ پولیس نے لاش تحویل میں لے کر عباسی شہید اسپتال منتقل کر دی ۔ جہاں اس کا پوسٹ مارٹم کیا جائے گا۔مقتقول کے بھائی نے پولیس کو بتایا کہ  ہمارا بھائی شاہ زمان کراچی میں اپنی بیوی عاصمہ کے ساتھ رہتا تھا۔ گزشتہ رات عاصمہ نے ایک ایمبولینس کے ذریعے اس کی لاش جیکب آباد ہمارے پاس بھیجی اور ساتھ پیغام بھیجا کہ شاہ زمان نے خودکشی کر لی ہے۔ جب ہم نے میت دیکھی تو اس جسم پر تشدد اور بجلی کے جھٹکے لگائے جانے کے نشانات تھے۔ چنانچہ ہم فوری طور پر میت واپس کراچی لے آئے اور پولیس اسٹیشن لے گئے۔ہمسایوں سے پوچھا تو انہوں نے بتایا کہ گزشتہ روز وہ کئی گھنٹے تک شاہ زمان کے چیخنے چلانے کی آوازیں سنتے رہے۔ ہمسایوں نے کہا کہ جب وہ آوازیں سن کر ان کے گھر گئے تو عاصمہ نے انہیں اندر نہیں جانے دیا اور یہ کہہ کر دروازے سے واپس بھیج دیا کہ شاہ زمان کو پیٹ میں شدید درد ہے جس کی وجہ سے وہ چیخ چلا رہا ہے۔ اس کے بعد ممکنہ طور پر عاصمہ نے شاہ زمان کے منہ میں ریت بھر دی تھی تاکہ وہ چلا نہ سکے۔ مرنے کے بعد جب اس کی لاش ہمارے پاس پہنچی تب بھی اس کے منہ میں ریت موجود تھی۔ “ پولیس کا کہنا ہے کہ ”شاہ زمان کی لاش پر تشدد اور بجلی کے جھٹکے لگنے کے بے شمار نشانات ہیں اور ہاتھوں او رپیروں پر نشانات سے ظاہر ہوتا ہے کہ اسے باندھ کر رکھا گیا تھا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us