شیخ رشید کی سربراہی میں کالادھندا !

شیخ رشید کی سربراہی میں ریلوے اسٹیشنوں پر کالا دھندا جاری لیکن شیخ صاحب کو کیا کچھ بھی ہو، بس ان کو کسی کی بھی حکومت ہو ان بس ایک سیٹ درکار ہوتی ہے ۔ اس وقت شیخ صاحب دوسری بار پاکستان ریلوے کے وزیر بنے ہے لیکن ان کو کوئی خبر نہیں ان کے ہوتے ہوئے اسمگلنگ کا کالا دھندا جاری ہے ۔مسافر ٹرینوں کے ذریعے اسمگل شدہ سامان ایک شہر سے دوسرے شہر منتقل کئے جانے کا انکشاف ہوا ہے ۔ریلوے کے بعض افسران و اہلکار بالخصوص بکنگ کا عملہ مسافر ٹرینوں کے ذریعے اسمگل شدہ سامان کی ترسیل میں مبینہ طور پر ملوث ہے، جس کے باعث قومی خزانے کو خطیر رقم کا نقصان پہنچ رہا ہے۔ٹرینوں کے ذریعےسامان کی ایک شہر سے دوسرے شہر یا مقام پر منتقلی کے لئے ریلوے پولیس کی چیکنگ، سامان کی بکنگ کرانے والے کے کوائف اور سامان پر کلیئرنس کا اسٹیکر لگایا جانا ضروری ہے۔ لیکن بدقسمتی کے ساتھ انتظامیاں اور ریلوے عملے کی ملی بھگت سے یہ سب نہیں کیا جاتا۔بکنگ کا عملہ سامان بکنگ کے قوانین کو بالائے طاق رکھ کر اسمگل شدہ سامان کی بکنگ کرکے ایک شہر سے دوسرے شہر پہنچانے میں معاونت کررہا ہے۔ یہ انکشاف اس وقت سامنے آیا جب گزشتہ دنوں محکمہ کسٹم سکھر کی جانب سے ایک ہی دن میں کوئٹہ سے راولپنڈی جانے والی 2مسافر ٹرینوں جعفر ایکسپریس اور اکبر ایکسپریس پر چھاپے مارکر 5کروڑ روپے کا اسمگل شدہ سامان برآمد کیا گیا۔مسافر ٹرینوں میں چھاپوں کے دوران اسمگل شدہ غیر ملکی سگریٹ، پان پراگ، کپڑے، ممنوعہ مصنوعات، مضر صحت اشیاء تحویل میں لے لی گئیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us