سندھ کے بعد پنجاب میں بھی کتوں کے کاٹے کی ویکسین ناپید!

سندھ میں کتے کے کاٹنے کے واقعات دن بہ دن بڑھ رہے ہیں لیکن بد قسمتی کے ساتھ اس سلسلے نے اب پنجاب کا رُخ کرلیا ہے۔سندھ کے بعد پنجاب میں آوارہ کتوں کا وار جاری، کتے کے کاٹنے ریبیز میں مبتلا ہونے والا بچہ جاں بحق ہوگیا جبکہ 6 افراد مزید کتے کے کاٹنے کا شکار ہو گئے ہیں۔شیخو پورہ کے علاقے فیروز والا میں 8 روز قبل آوارہ کتے کے کاٹنے سے زخمی ہونے والا 10 سالہ لڑکا مبینہ طور پر اینٹی ریبیز ویکیسن نہ ملنے کے باعث آج دم توڑ گیا۔یوسف پارک فیروز والا کے محنت کش اشفاق کے 10 سالہ بیٹے علی احمد کو آوار کتے نے کاٹ لیا تھا۔اہل خانہ کے مطابق بچے کو شاہدرہ کے ٹیچنگ اسپتال میں لے جایا گیا لیکن وہاں کتے کے کاٹے کی ویکسین دستیاب نہیں تھی۔اسپتال کے عملے نے یہ کہہ کر انہیں گھر واپس بھیج دیا کہ بچے کی حالت بہتر ہے، 4 روز بعد بچے کو تیز بخار ہوا، جسے پھر اسپتال لے گئے، جہاں اسپتال انتظامیہ نے اسے ٹی بی کا مرض بتا دیا، اس طرح اسپتالوں میں چکر لگاتے رہے، آٹھویں دن بچہ خلق حقیقی سے جا ملا۔مریدکے میں بھی 5 افراد کوکتے نے کاٹ لیا تھا

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us