دس سالہ فرشتے انصاف کی منتظر

خیبر پختونخواہ کے علاقے مہمند سے اغواء ہونے والی دس سالہ فرشتے کی نعش پانچ روز بعد اسلام آباد سے مل گءی۔ پولیس کی جانب سے ابتداءی تحقیقات میں، فرشتے کے ساتھ مبینہ زیادتی کے شواہد بھی ملے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق، فرشتے پندرہ مءی کو اپنے علاقعے سے لاپتہ ہوءی تھی، جس کی نعش پانچ روز بعد، تشدد زدہ حالت میں، اسلام آباد کے ایک ویران جنگل سے ملی۔ پولیس کی جانب سے ابتداءی تحقیقات شروع کر دی گءی ہیں جبکہ آءی جی اسلام آباد نے بھی واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے۔

فرشتے کی نماز جنازہ مہمند میں ادا کر دیا گیا ہے۔

اس حوالے سے عوامی حلقوں میں شدید غم و غصہ بھی پایا جا جارہا ہے جو اس واقعے کی پر زور مزمت کے ساتھ اس کی جلد اور شفاف تحقیقات کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us