بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام،غریبوں کو لوٹا جانے لگا!

اندرون سندھ کے کئی گاؤں میں بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام ڈیبٹ کارڈ سے امداد لینے والی بیوہ بے سہارا غریب خواتین کی امدادی رقوم سے کٹوتی کرکے لاکھوں خواتین سے کروڑوں روپے کی  کرپشن جاری ہے۔ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام ڈیبٹ کارڈ کے ذریعےامداد لینے والی بے سہارا ،بیوہ غریب اور خواتین کی امدادی رقوم میں کرپشن کو بینک کی تبدیلی بھی نہ روک سکی۔

بے سہارا ،بیوہ خواتین کو لوٹنے کے لیے سابقہ ریٹلرز اور افسران نے سابقہ بینک چھوڑ کر نئے بینک میں امدادی رقوم چلانے کا حقوق لیا اور ضلعی افسران اور چیکنگ ٹیموں کے ساتھ مل کر بیوہ ،بے سہارا غریب خواتین کی امدادی رقوم میں کروڑوں روپے کی کرپشن کر رہے ہیں  بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے تحت امدادی لینے والی بیوہ خواتین کے لیے کوئی چار دیواری کا اہتمام بھی نہیں کیا گیا غریب خواتین سڑکوں پر ذلیل ہورہی ہیں اور انکے امداد رقوم سے کٹوتی بھی کی جارہی ہے سندھ کے علاقے روجھان کی لاکھوں بے سہارا ،بیوہ خواتین نے وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی  امدادی رقوم سے کٹوتی کرنے پر اومنی شاپ اور انکے حمایتی افسران کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us