بلوچستان میں اسمگلنگ عروج پر! ذمہ دار کون؟!

صوبہ بلوچستان رقبے کے لحاظ سے پاکستان کا سب سے بڑا صوبہ ہے،پاکستان میں سب سے زیادہ اسمگلنگ کا کاروبار بھی یہاں ہوتا ہے۔کیونکہ بلوچستان کا باڈر ایران کے ساتھ ملتا ہے۔مہنگائی کے اس دور میں غربت،بے روزگاری،بھوک افلاس کی وجہ سے صوبے کے زیادہ ترعلاقوں میں لاقانونیت کا راج ہے جب کہ یہاں اسمگلنگ کا کاروبار عروج پر ہے۔ منشیات اور الیکٹرونکس اشیاء کے بعد ایرانی،پٹرول و ڈیزل کی دوسرے صوبوں کی جانب آزادانہ طور پر غیر قانونی نقل و حمل ہوتی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق ہزاروں افرادبے روزگاری سے تنگ آکر اسمگلروں کے ساتھ منسلک ہوگئے ہیں۔اسمگلنگ خاص کر ایرانی ڈیزل کی اسمگلنگ حکومتی کی رٹ کے لیے سوالیہ نشان ہے،کیوںکہ قانون نافذ کرنے والے اداروں،پولیس،کسٹم اور دیگر محکموں کی موجودگی کے باوجود اسمگلنگ کا کاروبارجاری ہے۔اس شاہراہ پر قانون کی عمل داری،برائے نام ہے۔ہائی وے پولیس کے کچھ افراد ایسے ہیں جو اس کالے دھندے میں ملوث ہوتے ہیں لیکن صوبائی حکومت کی طرف سےاس کا کوئی نوٹس نہیں لیا جاتا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us