آگ بجھانے کے ناکارہ آلات،سندھ اسمبلی بلڈنگ کے لیے خطرہ!

آگ بھجانے کے ناکارہ آلات سندھ اسمبلی کے لیے خطرہ بن گئے۔انتظامیہ کی لاپرواہی کی وجہ سے سندھ اسمبلی کو آ تشزدگی کاخطرہ لاحق ہو گیا ہے۔ماہرین کا کہنا ہے اربوں روپے کی لاگت سے نو تعمیر شدہ سندھ اسمبلی شارٹ سرکٹ یا کسی بھی وجہ سے آگ بھڑک اُٹھی تو آگ بجھانے کا کوئی انتظام موجود نہیں جس کی وجہ سے کوئی المناک واقعہ پیش آسکتا ہے۔نیب کی تحویل میں موجود سندھ کی حکمران جماعت کے اراکین اسمبلی کو ایوان میں لانے تک طویل اجلاس اور پبلک اکاؤنٹ کمیٹی کے اجلاس پر کروڑوں روپے خرچ کیے جا رہے ہیں۔جبکہ عمارت کو محفوظ بنانے کے لیے  کسی بھی قسم کاکوئی اقدام نہیں کیا گیا۔اسمبلی میں لگائے گئے فائر سیلنڈر 2008 میں رکھے گئے تھے لیکن 2010 میں یہ زائد المیعاد ہو جانے کی وجہ سے اسے تبدیل نہیں کیا گیا۔عمارت میں بوائلر،جنریٹر روم،پمپنگ ہاؤس اور دیگر برقی آلات ہونے کے باوجود سندھ اسمبلی میں آگ بجھانے کا کوئی انتظام موجود نہیں اور نہ ہی کوئی تربیت یافتہ عملہ موجود ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

WhatsApp WhatsApp us