عوام کو کروڑوں کا چونا لگانے والا آٹا اور دودھ مافیا

دکانداروں کی جانب سے من مانی قیمت پر دودھ اور آٹا فروخت کیا جارہاہے۔ حکومت اور انتظامیہ پر اسرار طور پر خاموش ہیں۔ دودھ کی دکانوں پر 16 روپے اور اس سے بھی  زیادہ پیسے بڑھا کر دودھ فروخت کیا جارہا ہے۔ خیال رہے کہ رواں سال اپریل میں دودھ کی فی لیٹر قیمت میں اچانک 23 روپے اضافہ کردیا گیا تھا۔

دودھ کی قیمتوں میں اضافے کے ساتھ ساتھ آٹے کی قیمتوں میں بھی من مانا اضافہ کردیا گیا ہے۔ رپوٹ کے مطابق خالص چکی  آٹا 58 روپے کلو تک پہنچ گیا ہے۔ بیوپاریوں کا کہنا ہے کہ محکمہ خوراک کے کمیشن کھانے والے بھوکےعملے نے ملی بھگت سے اوپن مارکیٹ میں گندم کے نرخ بڑھانے کا اثر خالص چکی اور فائن آٹے کے نرخوں پر پڑا ہے۔ آٹے کا 5 کلو کا تھیلہ جو 240 سے 250 روپے تک میں فروخت ہورہا تھا۔ اب 300 روپے میں فروخت کیا جارہا ہے۔ آٹے اور دودھ کی قیمتوں میں من مانا اضافہ عوام سے وصول کیا جارہا ہے اور کمشنر کراچی اور انتظامیہ خاموش ہیں۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

WhatsApp WhatsApp us