بڑے شہر کے بڑے ہسپتالوں میں مریضوں کی درگت

 

اسلام آباد پو لی کلینک ہسپتا ل میں رات گئے بھی مریض خوار ہو نے لگے۔ ڈاکٹروں کی بدتمیزی معمول بن گئی۔

سیکٹر جی سیون سے عبدالرحمن نامی نوجوان 10 گھنٹے سے اپنڈکس کے درد میں مبتلا رہا۔ جسکو ڈاکٹروں نے پو لی کلینک سے پمز ہسپتال ریفر کر دیا۔ جبکہ پمز والوں نےواپس پو لی کلینک بھیج دیا۔ جہاں ڈاکٹر عامراور لیڈی ڈاکٹر کا کہنا تھا کہ پیشنٹ بھاڑ میں جائے۔ مرتا ہے تو مر جائے اس کو ہم نہیں رکھ سکتے۔ اپنڈکس کے مرض میں مبتلا عبدالرحمن عمر 21 سال جو اس وقت بھی اپنے بوڑھے ماں باپ کے ساتھ خوارہو رہا ہے جسکو اس کے والدین اسلام آباد سے راولپنڈی ہسپتا ل لے گئےتھے۔ آگے کتنے خوارہوئے ہونگے اس کا کسی کو معلوم نہیں۔ مریض اس وقت موت کی کشمکش میں ہے۔ کیا یہی ہے تبدیلی؟

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

WhatsApp WhatsApp us