کے ڈی اے کے چور

کے ڈی اے نے 80 کروڑ روپے مالیت کے ٹھیکے ملی بھگت سے غیر قانونی الاٹ کرنے کے خلاف اینٹی کرپشن حکام نے کارروائی کرتے ہوئے ایک ایگزیکٹو انجینیئر کو گرفتار کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اینٹی کرپشن ایسٹ زون کی ٹیم نے مجسٹریٹ کی موجودگی میں بلدیہ عظمی کے انجینیئرنگ ڈیپارٹمنٹ اور کے ڈی اے کے آفس پر چھاپہ مار کر غیر قانونی ٹھیکے جاری کرنے کے الزام میں ایکس ای این ظہیر عباس کو گرفتار کرلیا۔ کارروائی کے دوران محکمے سے جاری ہونے والے ٹھیکوں کا ریکارڈ ضبط کرلیا گیا۔

اینٹی کرپشن حکام کے مطابق گرفتار ایکس ای این پر قومی خزانے کو 80 کراڑ روپے کا نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔  ملزم نے دیگر افسران کی ملی بھگت سے بھاری رقم وصول کر کے غیر قانونی طور پر 80 کروڑ ٹھیکے نجی کمپنی کو جاری کیے تھے۔ گرفتار ملزم ظہیر عباس کے ایم سی میں ہوتے ہوئے کے ڈی اے اسکیموں میں ترقیاتی کاموں کے ورک آرڈر جاری کرتا تھا۔ ملزم کی جانب سے جو ورک آرڈر جاری کیے کیے گئے وہ اسکیموں کی سالانہ فہرست میں دوسرے سے شامل ہی نہیں تھے۔ اور ان اسکیموں  کا ذکر کے ڈی اے کی بجٹ بک میں بھی شامل نہیں تھا۔ اینٹی کرپشن حکام کے مطابق غیر قانونی ٹھیکوں کے لیے جاری ہونے والے ورک آرڈر پر اس وقت کے ڈی جی کے ڈی اے بدر جمیل میندھرو کے دستخط موجود ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

WhatsApp WhatsApp us