کے ایم سی میں کروڑوں کے ٹھیکے لاکھوں کے نزرانے

کے ایم سی کا 8 کروڑ کا ٹھیکہ متنازعہ. کراچی: بلدیہ کراچی میں ملبہ اٹھانے اور فوٹ پاتھ کی بحالی کے 8 کروڑ کے ٹھیکے میں مسلسل اقرابا پروری اور مخصوص کنٹریکٹرز کو نوازے جانے کیخلاف ٹھیکیداروں کی نمائندہ تنظیم کراچی کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن بھی میدان میں آگئی ہے اور مذکورہ ٹینڈرز پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے اعلیٰ حکام سے فوری نوٹسس اور کاروائی کیلئے تحریری خطوط ارسال کر دیئے ہیں، جبکہ چند روز قبل مہران کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن نے بھی مذکورہ 8 کروڑ کے لاگت کے ٹھیکے میں فرسٹ، سیکنڈ اور تھرڈ لوئسٹ کو چھوڑ کر فورتھ لوئسٹ کو کامیاب قرار دیئے جانے پر متعلقہ افسران پر 50 لاکھ روپے رشوت وصولی کا الزام عائد کیا تھا، کراچی کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن کے جنرل سیکریٹری عبدالرحمٰن کا کہنا ہے کہ ملبہ اٹھانے اور فٹ پاتھ کی بحالی کے مذکورہ ٹھیکے کو 3 مرتبہ طلب کیا گیا لیکن حیران کن طور پر ایک ہی کنٹریکٹر گروپ کو تینوں مرتبہ نوازنے کی کوشش کی گئی، اس حوالے سے ثبوت پیش کئے جانے پر میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سیف الرحمٰن نے ازسرنو بڈ کا حکم دیا تاہم ایک مرتبہ پھر چہیتوں کو نوازنے کیلئے تمام قوانین اور قوائدوضوابط کو یکسر نظر انداز کیا گیا. 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

WhatsApp WhatsApp us