سکون کے دو لمحے

وہ تو سوتے رہتے ہیں اپنی خودسری میں نرم بستروں پر، مگر عوام کو نرم بستر بھی نصیب نہیں ہوپاتا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

WhatsApp WhatsApp us